Health Urdu

مسلسل کارٹون دیکھنے والے بچے کن مسائل کا شکار ہورہے ہیں؟

آج کل بچے جسمانی سرگرمیوں کے برعکس اپنا قیمتی وقت کارٹون دیکھنے میں صرف کررہے ہیں، جس کا بے پناہ نقصان سامنے آرہا ہے۔

کیا آپ جانتے ہیں کہ ہروقت کارٹون دیکھنے والا بچہ کن مسائل کا شکار ہوسکتا ہے، اکثر افراد اس معاملے میں لاعلم ہیں تو آئیے ہم آپ کو اس کے ان دیکھے نتائج سے آگاہ کئے دیتے ہیں۔

غلط کو صحیح کہنے کی عادت

زيادہ تر کارٹون مغرب طرز پر بنائے جاتے ہیں جس میں ایسے کردار سپر پاور کے طور پر پیش کیے جاتے ہیں جو طاقتور اور منفی سوچ کے حامل ہوتے ہیں، اس طرز عمل کے باعث بچہ غلط بات کو صحیح کہنے کے لئے کچھ بھی کرنے کو تیار ہوجاتا ہے۔

صحت پر اثرات

ہر وقت کارٹون دیکھنے کا اثر بچے کی جسمانی صحت پر بھی ہوتا ہے، ایسے بچے سست ہو جاتے ہیں اور جسمانی سرگرمیوں سے دور رہنے کی کوشش کرتے ہیں۔

اس کے ساتھ ساتھ مستقل اسکرین کے سامنے بیٹھے رہنے سے ان کو نظر کی کمزوری اور سر درد کے مسائل کا بھی سامنا ہو سکتا ہے اور کم عمری میں ہی چشمہ لگ جاتا ہے۔

قبل از بلوغت

مغربی طرز پر بننے والے ان کارٹون کا مواد زيادہ تر لو اسٹوریز پر مشتمل ہوتاہے، کارٹون کی مدد سے ہی ایسے سین بھی پیش کیے جاتے ہیں جو بالغ لوگوں کے ڈراموں یا فلموں میں ہوتے ہیں ان کے زيرِ اثر بچے بہت متاثر ہوتے ہیں۔

غیر فطری تبدیلیاں

ایسے بچے جو ہر وقت کارٹون دیکھنے میں مشغول رہتے ہیں وہ ایک خیالی دنیا کے باسی بن جاتے ہیں جہاں پر ہر اصل نظر آنے والی چیز درحقیقت غیر فطری ہوتی ہے جبکہ بچہ خود بھی ایک روبوٹ کی طرح برتاؤ کرنے لگتا ہے۔

درج بالا کے ایسے نقصانات ہیں جو ہماری نسل کے ساتھ جونک کی طرح چمٹ گئے ہیں، اس کا مقابلہ کرنے کے لئے ضروری ہے کہ ایسے کارٹون بنائے جائے جو مشرقی روایات کو فروغ دیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
%d bloggers like this: